LYRICS - Manqabat 2021 | Sakina Imamat Ka Sitara Hai | Syed Raza Abbas Zaidi | Bibi Sakina Manqabat | 1442

 

LYRICS - Manqabat 2021 | Sakina Imamat Ka Sitara Hai | Syed Raza Abbas Zaidi | Bibi Sakina Manqabat | 1442

 

 
Manqabat Lyrics
سکینہؑ فجرِ امامت کا وہ ستارا ھے
حُسینؑ آپکی خاطر جسے اُتارا ھے

اگر یہ نا ہوں تو تاروں میں روشنی نا رھے
اِسی کے نور سے روشن جہان سارا ھے

نمازِ شب میں سکینہؑ کو مانگتے ہیں حُسینؑ
یہ جانماز پہ کتنا حَسیں نظارا ھے

یہ جب تلک نا ہو سینے پہ نیند آتی نہیں
کہاں حُسینؑ کا اسکے بنا گزارا ھے

دیا جو واسطہ اسکا تو آگئے عباسؑ
چچا بھتیجی کا رشتہ بھی کتنا پیارا ھے

ھے مثلِ فاطمہؑ مشکل کشا امامت کی
مدد کے واسطے سجادؑ نے پکارا ھے

سکینہؑ بن کے چلی آئیں فاطمہؑ پھر سے
بنا حُسینؑ کے رہنا کہاں گوارا ھے

یہ معجزہ بھی کئی شب ربابؑ نے دیکھا
وہیں ھے چاند جہاں آپکا اشارا ھے

ہو شاہ ذادیؑ یہ ذیشان اور رضا پہ کرم
بلالیں روضے پہ ارمان یہ ھمارا ھے
----------------------------------------------



LYRICS - Manqabat 2021 | Sakina Imamat Ka Sitara Hai | Syed Raza Abbas Zaidi | Bibi Sakina Manqabat | 1442 LYRICS - Manqabat 2021 | Sakina Imamat Ka Sitara Hai | Syed Raza Abbas Zaidi | Bibi Sakina Manqabat | 1442 Reviewed by Nohayonline.lyrics on 3:12 PM Rating: 5

No comments:

All lyrics are Provided By Videos Caption and Noha Video Description. Any Problem Email Me. Powered by Blogger.