Lyrics - Haye Abbas Nahi Aye Na Aya Pani - Syed Raza Abbas Zaidi - Muharram 1442 - 2020

 

Lyrics - Haye Abbas Nahi Aye Na Aya Pani - Syed Raza Abbas Zaidi - Muharram 1442 - 2020


Noha Lyrics
ھائے عباسؑ نہیں آئے نا آیا پانی
ڈھونڈتی رھگئی کوزے میں سکینہؑ پانی

01.روتے دیکھا جو سکینہؑ کو تو بچوں نے کہا
ایسا لگتا ھے ھمیں اب نا ملیگا پانی.

02.روئے بہتے ھوئے پانی کیلئے لئے جب غازیؑ
رویا عباسؑ کو مشکیزے سے بہتا پانی.

03.عکس دکھتا تھا سکینہ کا کبھی اصغر کا
کیسے عباس نے بہتے ھوئے دیکھا پانی.

04.اُسکو معلوم تھا پیاسی ھے بھتیجی میری
پاس ھوتے ھوئے منہ سے لگایا پانی

05.لاش عباس ع پہ روتے رہے پیاسے شبیر ع۔
اور مشکیزے پہ کرتا رہا گریہ پانی۔

06۔گرگیا غازیؑ کا سر نیزے سے جب ظالم نے
سامنے بالی سکینہؑ کے گرایا پانی

07۔ایسا عموں کی جدائی کا ھوا صدمہ اُسے
پھر کبھی بالی سکینہؑ نے نا مانگا پانی۔

08۔ھائے عباسؑ کی زینبؑ کو بہت یاد آئی
فضل نے جب بھی مدینے میں پلایا پانی

09۔بھول نا جانا علمدارِ وفا کی غربت
جب بھی پیاسوں کو سبیلوں سے پلانا پانی

10۔ھم نے خود دیکھا ھے زیشان و رضا یہ منظر
اب بھی عباسؑ کی تربت سے ھے لپٹا پانی



Lyrics - Haye Abbas Nahi Aye Na Aya Pani - Syed Raza Abbas Zaidi - Muharram 1442 - 2020 Lyrics - Haye Abbas Nahi Aye Na Aya Pani - Syed Raza Abbas Zaidi - Muharram 1442 - 2020 Reviewed by Nohayonline.lyrics on 4:00 PM Rating: 5

No comments:

All lyrics are Provided By Videos Caption and Noha Video Description. Any Problem Email Me. Powered by Blogger.