LYRICS | BIBI QUBOOL KARAIN | Mesum Abbas | Muharram 1442 | Lyrics In Urdu

 

LYRICS | BIBI QUBOOL KARAIN | Mesum Abbas | Muharram 1442 - Lyrics




بے کس پہ رونے والوں کا
ہدیہ قبول ہو
یا فاطمہ س حسین ع کا
پرسہ قبول ہو

یا فاطمہ زہرا س
یا فاطمہ زہرا س

سف غم بچھا کر یہ مانگی دعا
بی بی س قبول کریں

یہ مجلس یہ ماتم یہ اشک عزا
بی بی س قبول کریں

غم شہ میں سب کچھ لٹا تے رہے
غریبی میں بھی غم مناتے رہے
ہیں ایسے بھی تنگ دست اہلِ عزا
تبرک میں پانی پلاتے رہے
تبرک جو بانٹا تو بس یہ کہا

بچھایا ہے جب گھر میں فرش عزا
سجایا عزا خانہ شبیر ع کا
علم نصب کرتے ہوئے میری ماں
بہاتی تھی آنکھوں سے اشک عزا
اور اس کے لبوں پر تھی بس ایک صدا

سلامت رہیں پر مگن ماتمی
قماں ذن یہ زنجیر زن ماتمی
کبھی خاک اڑاتے ہیں روتے ہوئے
یہ کہتے ہیں خونی بدن ماتمی
لہو کا یہ پرسہ جو ہم نے دیا


یہ ہے عشقِ شبیر ع کی ایک دلیل
سجائیں علم یا بنائیں سبیل
سبیلوں پہ لکھ کر سکینہ س کا نام
عقیدت کو کرتے ہیں اپنا وکیل
پلاتے ہیں پانی یہ کر کے دعا

یہ سوز و سلام اور یہ مرثیہ
یہ سینہ زنی اور آہ و بکا
مصائب کا اظہار کرتے ہوئے
لٹے گھر کا بی بی س کو پرسہ دیا
یہ جملہ ہمیشہ لبوں پر رہا

شبیع علم اور تابوت پر
کبھی ذوالجناح پہ ہوئے نوحہ گر
کسی حال میں بھی ہوں اہل عزا
نہ رکنے دیا مجلسوں کا سفر
نہیں کرسکے حقِ گریاں ادا

وہ مولائی مائیں ہیں ایک سائباں
ملے جن کی آغوش میں نوحہ خواں
جو بچوں کو سقّا بناتی رہیں
سجائے ہوئے با وفا کا نشاں
یہ ان کی عقیدت کے طرزِ وفا

وہ پُر غم عزادار وہ ماتمی
نہیں جا سکے کربلا جو کبھی
بقا چار لوگوں میں کی مجلسیں
امام زمانہ عج سے فریاد کی
یہ ذکرِ شہنشاہِ کربوبلا

یہ کوشش ہے میثم کی مظہر کہو
کوئی ایک نوحہ تو ایسا بھی ہو
نہ ہو جس میں شہرت کی خواہش ذرا
کبھی ایسی خالص عبادت بھی ہو
اٹھا کر کہیں سب ہی دست دعا

Ya Fatima Zehra, Ya Fatima Zahra

Saf e Gham Bicha Kar Ye Maangi Dua, Bibi Qubool Kare, Bibi Qubool Karain
Ye Majlis Ye Matam Ye Ashke Aza, Bibi Qabool Karen Bibi Qubool Karain

Gham e Sheh mai sab kuch lutaate rahe, Gharibi mai thi ghum manaate rahe
Hain aise bhi tangdast ahle aza, Tabarruk mai paani pilaate rahe
Tabarruk jo baanta to bus ye kaha…

Bichaya hai jab ghar me farsh e aza, sajaya azakhana Shabbir ka
Alam nasb karte huay meri maa, Bahaati thi aankhon se ashk e aza
Aur uske labon par thi bus ek dua…

Salamat rahen pur mahan matami, Qamazan ye zanjeerzan matami
Kabhi khaak uraate hain rote huay, Ye kehte hain khooni badan matami
Lahu ka ye pursa jo hum ne diya..

Ye hai ishqe Shabbir ki ek daleel, Sajayen alam ya banayen sabeel
Sabeelon pe likh kar Sakina ka naam, Aqeedat ko karte hain apnø wakeel
Pilaate hain paani ye karke dua…

Ye soz o salam aur ye marsiya, Ye seena zani aur aaho buka
Masayib ka izhaar karte huay, Lute ghar ka Bibi ko pursa dia
Ye jumla hameysha labon par raha…

Shabih e alam aur taboot par, Kabhi Zuljanah par huay nauhagar
Kisi haal mai bhi hon Ahle Aza, Na rukne diya majlison ka safar
Nahi karsake haq e girya ada…

Vo maulayi maayen hain ek sayiban, Mile jinki aaghosh mai nohakhwan
Jo bachon ko saqqa banaati raheen, Sajaye huey bawafa ka nishan
Ye unki aqeedat ye tarz e wafa…

Vo pur gham azadar vo matami, Nahi jaasake Karbala jo kabhi
Bapa chaar logo me ki majlisain, Imam e Zamana se faryad ki
Ye zikr e Shehenshah e Karbobala…

Ye koshish hai Mesum ki Mazher kaho, Koi ek noha to aisa bhi ho
Na ho jisme shohrat ki khwahish zara, Kabhi aisi khaalis ibaadat bhi ho
Uthakar kahain sab hi dast e dua…



LYRICS | BIBI QUBOOL KARAIN | Mesum Abbas | Muharram 1442 | Lyrics In Urdu LYRICS | BIBI QUBOOL KARAIN | Mesum Abbas | Muharram 1442 | Lyrics In Urdu Reviewed by Nohayonline.lyrics on 11:13 AM Rating: 5

No comments:

All lyrics are Provided By Videos Caption and Noha Video Description. Any Problem Email Me. Powered by Blogger.